KARL's Default Playlist, 3 Audios
0:00
0:00
  • اک ایسا گھر چاہیئے مجھکو جس کی فضہ مستانہ ہو سازینہ ظفر
    اک ایسا گھر چاہیئے مجھکو جس کی فضہ مستانہ ہو سازینہ ظفر اک ایسا گھر چاہیے مجھ کو ، جس کی فضا مستانہ ہو اک کونے میں غزل کی محفل اک کونے میں مے خانہ ہو ایسا گھر جس کے دروازے ، بند نہ ہوں انسانوں پر شیخ و برہمن ، رند و شرابی سب کا آنا جانا ہو اک تختی انگور کے پانی سے لکھ کر در پر رکھ دو اس گھر میں وہ آئے جس کو صبح تلک نہ جانا ہو جو مے خوار یہاں آتا ہے اپنا مہماں ہوتا ہے وہ بازار میں جا کر پی لے جس کو دام چکانا ہو پیاسے ہیں ، ہونٹوں سے کہنا کتنا ہے آسان ظفر مشکل اس دم آتی ہے جب آنکھوں سے سمجھانا ہو ظفر گورکھپوری
    khanasifjohi 00:02:24 177 0 Downloads 0 Comments
  •  sangeet انوپ جلوٹا براہ راست فجی محفل میں غزل مکھڑے
    sangeet انوپ جلوٹا براہ راست فجی محفل میں غزل مکھڑے Sangeet Shumaila Khan thanks آس جب بن کے توٹ جاتی ہے روح کس طرح کسمساتی ہے پوچھ اُس بدنصیب دلہن سے جِس کی بارات لوٹ جاتی ہے ظلمتِ شب کو ستاروں سے سنوارا ہم نے ، کتنی راتوں کو ، کتنی راتوں کو تجھے اُٹھ کے پکارا ہم نے کتنی راتوں کو تجھے اُٹھ کے پکارا ہم نے ظلمتِ شب کو ستاروں سے سنوارا ہم نے سَرَ جِس پے نا جھک جائے ، اُسے دَرَ نہیں کہتے ہر دَر پے جو جھُک جائے اُسے سَرَ نہیں کہتے کٹے گی یہ زندگی اب روتے روتے کٹے یہ اب زندگی روتے روتے یہ کہہ کر کئی ہیں خوشی روتے روتے کٹے یہ اب زندگی روتے روتے یہ کہہ کر کئی ہیں خوشی روتے روتے چاند انگڑائیاں لے رہا ہے ، چاند انگڑائیاں لے رہا ہے انگڑائیاں ، انگڑائیاں ، چاند انگڑائیاں لے رہا چاندنی مسکرانے لگی ہے چاند انگڑائیاں لے رہا ہے چاندنی مسکرانے لگی ہے ایک بھولی ہوئی سی کہانی پھر مجھے یاد آنے لگی ہے چاند انگڑائیاں لے رہا ہے چاندنی مسکرانے لگی ہے جام چلنے لگے دل مچلنے لگے چہرے چہرے پہ رنگِ شراب آ گیا بات کچھ بھی نا تھی بات اتنی ہوئی آج محفل میں وہ بے نقاب آ گیا آ آ آ آ آ آ آ گلشن تھا لالا زار ابھی کل کی بات ہے ہر گُل پے تھا نکھار ابھی کل کی بات ہے غزل میں ، غزل میں بندش و الفاظ ہی نہیں کافی غزل میں بندش و الفاظ نہیں کافی جگر خون بھی کچھ چاہیئے اثر کے لیئے تمہارے شہر کا موسم ، موسم موسم موسم موسم تمہارے شہر کا موسم تمہارے شہر کا موسم بڑا سہانہ لگے تمہارے شہر کا موسم برا سہانہ لگے میں ایک شام چُرا لوں اگر بُرا نا لگے ساغر سے صراحی ٹکراتی ، ساغر سے صراحی ٹکراتی بادل کو پسینہ آ جاتا تم زلف کو اگر بھکرا دیتے ساون کا مہینہ آ جاتا میں خد ہی اپنی تلاش میں ہوں ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔
    khanasifjohi 00:15:24 2.04 K 0 Downloads 1 Comments
  • کہیں دو دل جو مل جاتے بگڑتا کیا زمانے کا سلیم رضا نسیم بیگم
    کہیں دو دل جو مل جاتے بگڑتا کیا زمانے کا سلیم رضا نسیم بیگم کہیں جو دو دل جو مل جاتے بگڑتا کیا زمانے کا ۔ سلیم رضا، نسیم بیگم، موسیقی: اے حمید، نغمہ نگار: فیاض ہاشمی کہیں دو دل جو ملٔ جاتے تو بگڑتا کیا زمانے کا۔۔ کہیں دو دل جو مل جاتے تو بگڑتا کیا زمانے کا۔۔۔۔ خبر کیا تھی کہ یہ انجام ہوگا دل لگانے کا کبھی دو دل جو مل جاتے تو بگڑتا کیا زمانے کا۔۔۔ دلِ بیتاب سےکہہ دو تڑپتے سے نہ گھبرائے یہی تو وقت آیا ہے وفا کو. آزما نے کا۔۔۔ کہیں دو دل جو مل جاتے بگڑتا کیا. زمانے کا۔۔۔۔ کبھی دو دل جو مل جاتے تو بگڑتا کیا زمانے کا ۔۔۔ کبھی دو دل جو مل جاتے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کسی کؤ کیا. سنآےہم پہ کیاگزری. محبت میں ۔۔۔ کسی کو کیا سناۓہم پہ کیا گزری محبت میں ۔۔۔۔ کہ بس آغاز ہی انجام ہے آپنے فسانے کا ۔۔۔ کبھی دو دل جو مل جاتے تو بگڑتا کیا زمانے کا۔۔ کبھی دو دل جو مل جاتے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جہان والوں نے ملتے ہی کیا ہے یوں جدا ہم کو۔۔ کہ جیسے خواب دیکھا تھا تمہیں اپنا بنانے کا۔۔۔۔۔ کبھی دو دل جو مل جاتے تو بگڑتا کیا زمانے کآ۔۔۔ کبھی دو دل جو مل جاتے FILM : SAHELI [1960] PRODUCER : F.M. SARDAR, S.M. YOUSUF DIRECTOR : S.M. YOUSUF LYRICS : FAYYAZ HASHMI MUSIC : A. HAMEED SINGERS : NASEEM BEGUM, SALIM RAZA STARS : NAYYAR SULTANA, SHAMIM ARA, DARPAN, BAHAR, ASLAM PERVEZ, HASRAT LAKHNAVI, SALMA MUMTAZ, SHARARA, G.N. BUTT, CHANDNI, ZAMURRED, SHAMIM, NUZHAT, NIRALA
    khanasifjohi 00:03:25 711 0 Downloads 2 Comments
KARL
  • KARL
  • profile viewed 337 times
X