Experience YourListen.com completely ad free for only $1.99 a month. Upgrade your account today!

نا جانے کیا ہُوا جو تو…ے چُھو لیا لتا منگیشکر

Embed Code (recommended way)
Embed Code (Iframe alternative)
Please login or signup to use this feature.

نا جانے کیا ہُوا جو تونے چُھو لیا لتا منگیشکر
مووی درد 1981 موسیقار خیام نغمہ نگار نقاش لئلپوری (HD)
نا جانے کیا ہوا جو تونے چھو لیا
نا جانے کیا ہوا جو تونے چھو لیا
کھلا گلاب کی طرح میرا بدن
نکھر نکھر گئی سنور سنور گئی
بنا کے آئینہ تُجھے اے جانِ من
نا جانے کیا ہوا
بکھرا ہے کاجل فضا میں بھیگی بھیگی ہیں شامیں
بوندوں کی رمجھم سے جاگی آگ ٹھنڈی ہوا میں
آ جا صنم یہ حسیں آگ ہم لیں دل میں بسا
نا جانے کیا ہوا جو تو نے چھو لیا
کھلا گلاب کی طرح میرا بدن
نا جانے کیا ہوا جو تونے چھو لیا
آنچل کہاں مین کہاں یہ مجھے ہوش کیا ہے
یہ بے خدی تونے دی ہے پیار کا یہ نشہ ہے
سُن لے ذرہ سازِ دل گا رہا ہے نغمہ تیرا
نا جانے کیا ہوا جو تو نے چھو لیا
کھلا گلاب کی طرح میرا بدن
نا جانے کیا ہوا جو تونے چھو لیا
کلیوں کی یہ سیج مہکے رات جاگے ملن کی
کھو جائیں دھڑکن میں تیرے دھڑکنین میرے من کی
آ پاس آ تیری ہر سانس میں ، میں جائوں سمائوں
نا جانے کیا ہوا جو تو نے چھو لیا
کھلا گلاب کی طرح میرا بدن
نکھر نکھر گئی سنور سنور گئی
بنا کے آئینہ تُجھے اے جانِ من
نا جانے کیا ہوا جو تونے چھو لیا
نا جانے کیا ہوا جو تونے چھو لیا
نا جانے کیا ہوا جو تونے چھو لیا

Licence : All Rights Reserved


X